خبردار ہوشیار! موسمیاتی تبدیلیوں کےجان لیوا اثرات سے بچنے کے لیےرہ گئے صرف 3 سال

0
228

اسلام آباد جولائی14(ٹی این ایس):دنیا کو  اگر گلوبل وارمنگ اور موسمیاتی تبدیلیوں  کےجان لیوا اثرات سے بچانا ہے تو اس کے لیے انسان کے پاس صرف 3 سال ہیں۔ سائنسی جریدے نیچر میں شائع ہونے والے ایک مضمون میں سائنسدانوں اور محققین نے خبردار کیا ہے کہ گرین ہاؤس گیسوں کے اخراج  میں واضح کمی  کا آغاز کرنے کے لیے صرف 3 سال کا وقت بچا ہے۔ تین سالوں میں اگر کاربن گیسوں کے اخراج میں موثر کمی نہ لائی گئی تو پیرس معاہدے میں درجہ حرارت  کے حوالے سے جو ہدف طے کیا گیا تھا، اس کا حصول ناممکن ہو جائے گا اور اس کے  بعد حالات انسانوں کے قابو سے باہر ہو جائیں گے۔

نیچر میں شائع ہونے والے اس مضمون پر دنیا کے 60 سے زیادہ معروف سائنسدانوں نے دستخط کیے ہیں۔
اس مضمون میں سائنسدانوں کے جمع کیےہوئے ثبوتوں کو سامنے رکھ کر عالمی حکمرانوں اور لیڈروں  اقدامات کرنے کی اپیل کی گئ ہے۔
مضمون میں کہا گیا ہےکہ تمام ایکو سسٹمز میں تباہی کا آغاز ہو گیا ہے۔آرکٹک میں موسم گرما کے دوران منجمد  رہنے والی برف غائب ہوگئی ہے۔ بڑھتے درجہ حرارت کی وجہ سے موگے کی چٹانیں  بھی ختم ہو رہی ہیں۔
گرین ہاؤس گیسوں کا اخراج اگر موجودہ رفتار سے ہوتا رہا تو  اگلے 4 سے 26 سالوں کے دوران اتنا کاربن خارج ہو جائے گا کہ درجہ حرارت میں ڈیڑھ سے 2 ڈگری سینٹی گریڈ کا اضافہ ہو جائے گا۔مضمون کے مطابق  موسمیاتی تبدیلیوں سے  جان لیوا لُو چلے گی، قحط آئے گا اور سمندر کےپانی کی سطح بڑھ جائے گی۔سمندر کی سطح بڑھنے سے ساحلی شہر بھی زیر آب آجائیں گے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here