اگر بھارت نے کوئی حماقت کی تو مناسب جواب کا منتظر رہے: شاہ محمود قریشی

 
0
12789

ملتان 18 مئی 2020 (ٹی این ایس): وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ملتان میں میڈیا سے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ امریکا اور افغان طالبان کے درمیان امن معاہدہ بہت بڑی پیش رفت تھی۔

انہوں نے کہا کہ ہم گزشتہ دنوں کابل اور ننگر ہار میں ہونےوالےدہشت گردی کے واقعات کی مذمت کرتے ہیں۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی صورتحال ڈھکی چھپی نہیں، کورونا کےبعد توقع تھی کہ بھارت کشمیر میں نرمی کرےگا، بد قسمتی سےایسا نہیں ہوا، بھارت نے کوئی حماقت کی تو مناسب جواب کا منتظر رہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان کی خواہش ہے کہ امن کیلئے سازگار ماحول دیا جائے، خطے میں بھارت ایڈ ونچر کرنا چاہتا ہے عالمی طاقتیں نوٹس لیں۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ داعش کا کردار بھی کسی سے ڈھکا چھپا نہیں،اس کا بھی مقابلہ کرنا ہوگا، کورونا کی اس صورتحال سے اگر کوئی شعبہ ہمیں نکال سکتا ہے تو وہ زراعت ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ اسرائیل میں چینی سفیر کی ہلاکت پر ابھی کوئی قیاس آرائی نہیں کروں گا، ہم ہزاروں کی تعداد میں بیرون ملک پھنسے پاکستانیوں کو وطن واپس لائے ہیں۔

انہوں ںے کہا کہ امید کرتے ہیں ڈیزل کی قیمتوں میں کمی سے زراعت کو فائدہ ہو گا، کھاد کی قیمتوں میں کمی کیلئے پیکج دیا جارہا ہے، 65 ارب روپے کا پیکج زراعت کیلئے دیا جارہا ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ بیرون ملک موجود ایک لاکھ 10 ہزار افراد واپس آنا چاہتے ہیں، باہر سے آنے والوں کو قرنطینہ کرنا ایک بڑا مسئلہ ہے، قرنطینہ کی گنجائش بڑھانے کی کوشش کر رہے ہیں۔