سپریم کورٹ،تحریک عدم اعتماد ، سیاسی جماعتیں طلب

 
0
152

اسلام آباد 19 مارچ 2022 (ٹی این ایس): سپریم کورٹ نے تحریک عدم اعتماد پیش کرنے والی سیاسی جماعتوں کو نوٹس جاری کردیا ،آئی جی اسلام آباد سے بھی سندھ ہاس واقعے کی تفصیلی رپورٹ بھی طلب کر لی،عدالت عظمی نے تمام سیاسی جماعتوں کو ہدایت کی کہ آئین و قانون کے دائرہ کار میں رہیں ۔تحریک عدم اعتماد ، ڈی چوک پر جلسے اور لانگ مارچ سے متعلق سپریم کورٹ بار ایسی ایشن کی آئینی درخواست پر چیف جسٹس عمرعطا بندیال اورجسٹس منیب اختر پر مشتمل دورکنی بنچ نے سماعت کی۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ درخواست گزار کی استدعا سیاسی تناظر میں ہے،

عدالت نے ملک کے سیاسی تناظر کو نہیں آئین کو دیکھنا ہے قانون پر عملدرآمد ہونا چاہیے، اخبارات سے معلوم ہوا کہ آرٹیکل 63 اے کے حوالے سے حکومت بھی سپریم کورٹ آ رہی ہے، سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن لا اینڈ آرڈر کے حوالے سے خدشات رکھتی ہے، ہم نے از خود نوٹس نہیں لیا بلکہ دائر درخواست کو سن رہے ہیں، ہم نے ایک ایسا واقعہ دیکھا جو آزادی اظہار رائے کے آئینی حق کے برخلاف ہے۔اٹارنی جنرل نے کہا کہ اس بارے میں تو کوئی دوسرا سوال نہیں ہے، کچھ حکومتی ممبران سندھ ہاس میں تھے، جس نے سیاسی ماحول کو گرما دیا، اچانک سیاسی درجہ حرارت بڑھا اور یہ واقعہ ہوا ، عوام پر امن احتجاج کا حق رکھتے ہیں۔سپریم کورٹ نے تحریک عدم اعتماد پیش کرنے والی سیاسی جماعتوں کو نوٹس جاری کرتے ہوئے کہا کہ عدم اعتماد کا عمل آئین اور قانون کے مطابق ہونا چاہیے۔مزید سماعت پیر تک ملتوی کردی گئی۔